جلال ہوم سلوشن قراقرم وینٹر لوڈ 4 میں آٸس ہاکی اور کلاٸمبک کے مظاہرے کنڈین ہاٸی کمشنر کی شرکت کی جلکیاں
سید اسد اللہ غازی کالم نگار /صحافی ایڈیٹر اینڈ چیف ہنزہ آن لاٸن نیوز نیٹ ورک
سید اسد اللہ غازی جنرل سیکرٹری ہنزہ یونین آف جرنلسٹ

ہنزہ ۔سید اسد اللہ غازی سے ۔

 

 

 

 

 

 

 

قراقرم وینٹر لووڈ کے دلچسپ مقابلے جاری ہیں التت کے نوجوانوں کی تنظیم اسکارف کی جانب سے منعقدہ سرمائی کھیلوں کے مقابلوں میں آج ششکٹ گوجال ہنزہ کے مقام پر آئس کلائمبنگ کا انعقاد کیا گیا۔

 

آئس کلائمبنگ میں گلگت بلتستان اور چترال سے تعلق رکھنے والے مرد و خواتین کھلاڑیوں نے حصہ لیا ۔پرخطر کلائمبنگ میں کھلاڑیوں نے کمال مہارت کا مظاہرہ کیا ۔

 

 

وینٹرسپورٹس لووڈ سیزن فور کے مختلف مقابلوں کا سلسلہ جاری ہے اس حوالے سے آج ہنزہ ششکٹ کے مقام پر آئس کلائمبنگ کا انعقاد کیا گیا جس میں گلگت بلتستان اور چترال کے کھلاڑیوں نے پر خطر جمی برف پر اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرتے ہوئے مقررہ وقت پر منزل پر پہنچ گئے۔

 

 

اس موقع پر لڑکوں کے ساتھ لڑکیوں نے پر خطر جمی ہوئی برف پر گلائمبگ کرکے اپنے صلاحیتوں کا لوہا منوایا ۔یاد رہے کہ التت ہنزہ کے نوجوانوں کی تنظیم اسکارف کی کوششوں سے منعقدہ سرمائی کھیلوں کے مقابلے آج کل توجہ کا مرکز بنے ہوئے ہیں ۔اسکے علاوہ ضلع ہنزہ کے تاریخی گاؤں التت میں ونٹر سپورٹس کے سلسلے میں قراقرم ونٹر لوو ڈ لوڈ  4 کے مقابلے جاری ہیں۔

 

 

 

یہ خبر بھی پڑھیے گا ۔

 ۔ ونٹر سپورٹس گالہ دس دن تک جاری رہے گا فیسٹول میں مختلف سرمائی کھیلوں کے مقابلے منعقد ہونگے جن میں آئس کلائمنگ آئس سکیٹنگ سنو بورڈنگ کے مقابلوں کے علاوہ روایتی موسیقی و رقص اور روایتی کھانوں کی نمائش ہوگی۔

ایونٹ میں آج دو ٹیموں کے درمیان مقابلہ ہوا پہلا میچ مکے جٹوریائی سوسائٹی اور اولڈ ہنزہ ان کے درمیان منعقد ہوا جس میں دونوں ٹیمیں ایک ایک گول سے برابر رہیں جبکہ دوسرا میچ ایس سی او اور اپر چترال کے درمیان کھیلا گیا جس میں ایس سی او نے ایک کے مقابلے تین گول سے جیت حاصل کی۔

 

مزید پڑھیے یہ خبر بھی

مردوں کے ساتھ بھی جنسی زیادتی کرتے ہوئے ہمیں کوئی شرم،خوف اور ڈر محسوس نہیں ہوتا اور عائشہ اکرم تو پھر ایک زندہ اور خوبصورت لڑکی ہے اور اوپر سے ٹک ٹاکر بھی ہے رہی سہی کسر اسکے نرسنگ کے کیریئر نے پوری کررکھی ہے ایک لحاظ سے وہ مکمل پروفیشنل لڑکی ہے جو سامنے والے بندے کی آنکھوں کے ڈورے گن کر اسکا ذہن پڑھ سکتی ہے

خون جما دینے والی سردی کے باوجود سرکاری غیر سرکاری اداروں کے نمائندوں کے علاوہ ملک اور گلگت بلتستان سے شائقین کی آمد اور سخت سردی کے باوجود عوام کی دلچسپی قابل دید ہے

 

تبدیل دنیا کو نظر آرہی ہے ۔ اس لیےپاکستان کے بارے نظریے تبدیل ہورہے ۔ تبدیلی اپوزیشن کو بھی نظر آرہی ہے مگر عوام کی آنکھوں میں دھول جونکنے کی ناکام کوشش میں ہیں ۔اس کوشش میں لفافہ صحافی ,کچھ بیکاو میڈیا ہاوسس اور سوشل مہیم شامل ہے ۔ یہ تبدیلی کیا ہے ۔ کون اس تبدیلی کا موجب ہے ۔ کو نسا نظریہ ہے ۔ جو مغرب میں نظر آتا ہے پاکستانی میڈیا میں نظر نہیں آتا ہے ۔ پوری تفصیل اس کالم میں

 

 

شئیر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں